جرمنی: سینما میں داخل ہونے والا مسلح شخص ہلاک

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

جرمنی کے مغربی شہر ورنہائم کے وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ سینما کمپلیکس میں گھس کر فائرنگ کرنے والے نقاب پوش شخص کو پولیس نے گولی مار کر ہلاک کر دیا ہے۔

پیٹر بیوتھ نے ہینسن کی پارلیمنٹ کو بتایا کہ کنوپلس سینما کمپلیکس میں گولیاں چلنے کی اطلاع پر پولیس نے کمپلیکس پر گھیرا ڈال لیا۔

’پولیس کا خیال تھا کہ حملہ آور نے لوگوں کو یرغمال بنایا ہوا ہے اسی لیے اس کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا۔‘

وزیر داخلہ نے کہا کہ اس واقعے میں کوئی شہری زخمی نہیں ہوا۔

تاہم چند رپورٹس میں کہا جا رہا ہے کہ پولیس نے کمپلیکس میں دھاوا بولنے سے قبل آنسو گیس کا استعمال کیا جس کے باعث سینما میں موجود افراد متاثر ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اطلاعات کے مطابق مسلح شخص سینیما کمپلیس کے اندر موجود ہے

یہ واقعہ جمعرات کی دوپہر کو پیش آیا۔ پولیس کی بھاری نفری نے سینما کمپلیکس کو گھیرے میں لے لیا تھا۔

مقامی اخبار کا کہنا ہے کہ اس وقت یہ بات واضح نہیں کہ اس حملے کے پیچھے سیاسی یا نظریاتی وجہ تھی یا پھر ڈکیتی کی کوشش تھی۔

وزیر داخلہ کا کہنا ہے ’پولیس کو مقامی وقت پونے تین بجے ایمرجنسی کال آئی۔ کالر نے پولیس کو بتایا کہ ایک نقاب پوش شخص ہے ۔۔۔ اور مسلح ہے۔ یہ واضح نہیں کہ اس کے پاس اصلی بندوق تھی یا نقلی۔‘

انھوں نے مزید بتایا ’کالر نے چار گولیاں چلنے کی آوازیں سنیں اور کہا کہ حملہ آور ذہنی عدم توازن کا شکار ہے۔ اس کال کے بعد پولیس کی سپیشل فورسز کو طلب کیا گیا۔‘

اسی بارے میں