سڈنی میں ہر ہفتے ایک سڑک کو توڑا اور پھر بنایا جائے گا

تصویر کے کاپی رائٹ GOOGLE MAPS
Image caption کاروباری مرکز کی وجہ سے یہاں سڑک پر رش رہتا ہے

آسٹریلیا کے شہر سڈنی کی ایک مرکزی سڑک کو آئندہ چھ ماہ تک ہر اختتام ہفتہ پر ایک بار کھودا جائے گا اور پھر دوبارہ تعمیر کیا جائے گا۔

سڈنی کے مرکز میں واقع ایک سڑک کی چھ ماہ تک کھدائی اور پھر مرمت کا مقصد یہاں لائٹ ریل بچھانے کے منصوبے سے متعلق سروے کرنا ہے۔

سڈنی مارننگ ہیرڈ کے مطابق شہر کے کاروباری مرکز میں واقع ہونے کی وجہ سے یہ سڑک بہت مصروف رہتی ہے اور اسی وجہ حکام نے اختتام ہفتہ کی دو چھٹیوں سنیچر اور اتوار کے دوران اس کا کام کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ہفتے کے دیگر پانچ دن یہ قابل استعمال رہے۔

حکام نے اس منصوبے پر کام کرنے والے کارکنوں کو ہدف دیا ہے کہ وہ دو دنوں میں 120 میٹر سڑک کی کھدائی کریں گے اور اس کے نتیجے بچھائی گئی گیس، بجلی وغیرہ کی تاروں اور پلائپ لائنز کا تفصیلی نقشہ تیار کریں گے۔

اس کے علاوہ کارکن اس سڑک کے نیچے دفن پرانی ریلوے لائن کو صاف کریں گے جو 50 برس پہلے بند کر دی گئی تھی۔

سنیچر اور اتوار کو سڑک پر کام کرنے کے بعد پیر کو معمولاتِ زندگی شروع ہونے سے پہلے پہلے اس کی دوبارہ مرمت کر کے اسی پہلی والی حالت میں بحال کر دیں گے اور یہ کام آئندہ 24 ہفتوں تک جاری رہے گا۔

اس منصوبے کے ڈائریکٹر گلین بینٹلی نے اخبار کو بتایا ہے کہ’اس منصوبے کا یہ سب سے پیچیدہ اور طویل حصہ ہے اور اس حصے کو صاف کرنا اور لائٹ ریل کو بچھانا سب سے اہم مرحلہ ہے۔‘

سڈنی میں لائٹ ریل کے منصوبے پر حکومت ایک ارب 60 کروڑ ڈالر خرچ کر رہی ہے اور یہ سروس 2019 میں کام شروع کر دے گی۔

تاہم اس منصوبے میں بعض کاروٹوں کا سامنا بھی ہے جس میں کھدائی کے دوران آسٹریلیا کے قدیمی باشندوں ابورجنی کے دو ہزار کے قریب نوادرات ملے تھے۔

اس کے علاوہ ریلوے لائن کے راستے میں آنے والے صدیوں پرانے درختوں کی کٹائی کے خلاف احتجاجی مظاہرے ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں