ملکہ کی جاگیر کی مالیت میں اضافہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

برطانیہ میں ملکہ کی شاہی جاگیر یعنی کراؤن اسٹیٹ نے وزارت خزانہ کو ریکارڈ 30.41 کروڑ پاؤنڈ ادا کیے ہیں کیونکہ اس کا پورٹ فولیو 9.7 فیصد اضافے کے ساتھ بڑھ کر 12 ارب پاؤنڈ کا ہو گیا ہے۔

ملکہ کی شاہی جاگیر میں لندن کی ریجنٹ سٹریٹ اور پورے برطانیہ کی سمندر کی تہہ شامل ہے۔ کراؤن اسٹیٹ کی جانب سے دی جانے والی رقم 28.5 کروڑ پاؤنڈ سے بڑھ کر 30.41 کروڑ پاؤنڈ ہو گئی ہے۔

٭ ملکہ برطانیہ کتنی امیر ہیں؟

یہ رقم سوورین گرانٹ سے قبل آئی ہے۔ سوورین گرانٹ وہ رقم ہے جو ٹیکس دہندگان ملکہ کے لیے وزارت خزانہ کو دیتے ہیں۔

رواں سال ملکہ کو اس گرانٹ میں 4.3 کروڑ پاؤنڈ دیے گئے ہیں جو شاہی جاگیر کے منافعے کا 15 فیصد ہے۔

سوورین گرانٹ دو سال بعد دی جاتی ہے اور اس پر ہر پانچ سال بعد نظر ثانی کی جاتی ہے۔

آئندہ چند ماہ میں حکومت اور سینیئر شاہی اہلکار گرانٹ پر نظرثانی کریں گے۔ یہ گرانٹ 2012 میں 15 فیصد پر طے کی گئی تھی۔

اگر اس بار گرانٹ میں تبدیلی نہیں کی گئی تو یہ گرانٹ 2012 سے 3.1 کروڑ پاؤنڈ سے بڑھ کر 4.5 کروڑ پاؤنڈ ہو جائے گی۔

پن بجلی منصوبے

کراؤن اسٹیٹ کو ریجنٹ سٹریٹ اور سینٹ جیمز سٹریٹ پر احیا کے پروگرام کے فوائد حاصل ہوتے رہے ہیں۔

سمندری تہہ کو آف شور پن بجلی کے منصوبوں کے لیے لیز پر دینے سے 2.29 کروڑ پاؤنڈ کمائے جو 20 فیصد کا اضافہ ہے۔

سوورین گرانٹ کی سالانہ رپورٹ برائے 2016-2015 کے مطابق وزارت خزانہ شاہی خاندان پر 4.01 کروڑ پاؤنڈ خرچ کرتی ہے جن میں سے:

  • 16 لاکھ پاؤنڈ سے زیادہ شاہی محلات اور دیگر عمارتوں کی دیکھ بھال پر خرچ کیے جاتے ہیں
  • 40 لاکھ پاؤنڈ ملکہ اور شاہی خاندان کے سرکاری دوروں پر خرچ ہوتے ہیں جن میں دس لاکھ پاؤنڈ کی کمی واقع ہوئی ہے

رپورٹ کی لانچ پر کیپر آف پریوی پرس سر ایلن ریڈ نے محلات اور دیگر عمارتوں کی دیکھ بھال کے لیے خرچ کی جانے والی اتنی زیادہ رقم بتائی۔

انھوں نے بتایا کہ جائیداد کی دیکھ بھال پر خرچ ہونے والی رقم پچھلے سال کے قابلے میں 40 فیصد ہے لیکن جائیداد کی حالت تیزی سے خستہ ہوتی جا رہی ہے۔

سر ایلن ریڈ نے بتایا کہ اس سال دی جانے والی 4.28 کروڑ پاؤنڈ کی گرانٹ کا زیادہ حصہ ضروری مرمت پر خرچ کیے جائیں گے۔

بی بی سی کے شاہی امور کے رپورٹر پیٹر ہنٹ کا کہنا ہے کہ بکنگھم پیلس کی مرمت کے دوران اب ملکہ کو محل چھوڑنا نہیں پڑے گا۔

شہزادہ چارلز کی آمدن میں اضافہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

دوسری جانب ڈچی آف کورن وال اسٹیٹ سے شہزادہ چارلز کی ذاتی آمدن میں اضافہ ہوا ہے۔ ان کی آمدن تین فیصد اضافے کے ساتھ 20.5 ملین پاؤنڈ ہو گئی ہے اور ان کا ٹیکس بل پانچ لاکھ 31 ہزار پاؤنڈ کے اضافے کے ساتھ 50 لاکھ پاؤنڈ ہو گئی ہے۔

ان کے پورٹفولیوں میں اراضی، جائیداد اور مالی سرمایہ کاری شامل ہے۔

ڈچی آف کورنوال جس میں لندن کا اوول کرکٹ گراؤنڈ اور آئل آف سلی شامل ہیں سے ڈیوک اور ڈچس آف کورنوال کے نجی اور سرکاری اخراجات پورے کیے جاتے ہیں۔

یہ اسٹیٹ ولی عہد کو دی گئی ہے جس میں 23 کاؤنٹیوں میں ایک لاکھ 32 ہزار ایکڑ سے زائد کی اراضی شامل ہے۔

شہزادہ چارلز کو سوورین گرانٹ اور سرکاری محکمات سے 14 لاکھ پاؤنڈ ملتے ہیں۔

اسی بارے میں