پیرو میں تصویر لیتے ہوئے سیاح کی موت

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پیرو میں مکو پیکو کے پہاڑی سلسلے کی سیر و تفریح کے لیے اور اس کا نظارہ کرنے کے لیے ہر برس لاکھوں سیاح آتے ہیں

پیرو کے مشہور سیاحتی مقام ماچو پیچو پر فوٹو کھینچنے کی کوشش کے دوران پہاڑ سے گر کر ہلاک ہونے والے جرمن سیاح کی لاش کھائی سے برآمد کر لی گئی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ 51 سالہ اولیور پارک بدھ کو سلامتی سے متعلق ہدایات اور وارڈن کی تنبیہ کو نظر انداز کرتے ہوئے اس ممنوعہ علاقے تک چلے گئے جو کوہِ اینڈیز کے ایک پہاڑ کی ڈھلوان چٹان کے بالکل قریب ہے۔

الویور اس چٹان کے عین کنارے کھڑے ہوکر اپنی تصویر بنانے کی کوشش کر رہے تھے۔

حکام کے مطابق وہ اس جگہ پر اس انداز سے اپنا فوٹو کھنچوانے کے لیے پوز دینے کی کوشش کر رہے تھے جیسے وہ چھلانگ لگا رہے ہوں اور اس دوران وہ اپنا توازن کھو بیٹھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Olga Kovtun
Image caption ماچو پیچو کے پہاڑی سلسلے کی سیر و تفریح کے لیے اور اس کا نظارہ کرنے کے لیے ہر برس لاکھوں سیاح آتے ہیں

امدادی کارکنوں کو ان کی لاش جمعرات کو ملی جسے وہ بعد میں پولیس سٹیشن لے کر گئے۔

پولیس حکام کا کہنا تھا کہ ان کی لاش کو کسکو شہر کے مردہ خانے لے جایا جائے گا۔

خیال رہے کہ پیرو میں ماچو پیچو کے پہاڑی سلسلے میں سیر و تفریح کے لیے ہر برس لاکھوں سیاح آتے ہیں۔

اسی بارے میں