مسجد الحرام میں بھگدڑ، 18 زائرین زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption گذشتہ سال حج کے موقع پر ہی منٰی میں بھگدڑ مچنے سے کم سے کم 769 افراد ہلاک ہو گئے تھے

سعودی عرب کے میڈیا کے مطابق مکہ شہر میں مسلمانوں کے مقدس مقام مسجد الحرام میں گذشتہ رات بھگدڑ کے نتیجے میں 18 زائرین زخمی ہو گئے ہیں۔

یہ واقع اس وقت پیش آیا جب مسجد الحرام میں ماہ رمضان کے مقدس رات میں عبادت کے لیے بڑی تعداد میں زائرین وہاں جمع تھے۔

٭ بھگدڑ کے مہلک ترین واقعات

سعودی عرب کے محکمۂ صحت کے اہکار کا کہنا ہے کہ تمام زخمیوں کو جائے وقوعہ پر ہی طبی امداد فراہم کر دگئی تھی۔

یہ حادثہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب سعودی انتظامیہ آئندہ ستمبر میں ہونے والے حج کے لیے نئے سکیورٹی اقدامات لانے کی کوشش کر رہی ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال حج کے موقع پر ہی منٰی میں بھگدڑ مچنے سے کم سے کم 769 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

حکام کا کہنا تھا کہ بھگدڑ جمرات کے مقام پر حاجیوں کے آگے سے گزرنے والی بسوں میں سے کچھ سامان سامنے آ گرا جس سے افراتفری مچ گئی تھی۔

اس سے قبل گذشتہ سال 12 ستمبر کو مکہ کی مسجد الحرام کے صحن میں کرین گرنے سے کم از کم 107 افراد ہلاک اور 200 سے زیادہ افراد زخمی ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں