ہیلری نے امریکہ کو خطرے میں ڈالا: ٹرمپ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

امریکہ میں صدارتی دوڑ میں شامل رپبلکن اُمیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ہیلری کلنٹن کی ذاتی ای میل ایڈریس کے استعمال نے ’پورے ملک کو خطرے‘ سے دوچار کیا ہے۔

امریکی ریاست جنوبی کیرولینا میں ایک ریلی سے خطاب میں ٹرمپ نے کہا کہ ایف بی آئی کی جانب سے ہیلری کے اقدام کو مجرمانہ قرار نہ دینا نظام میں دھاندلی کی واضح مثال ہے۔

امریکہ میں صدارتی امیدوار میں ممکنہ طور پر رپبلکن پارٹی کی جانب سے ڈونلڈ ٹرمپ اور ڈیموکریٹ پارٹی کی جانب سے ہیلری کلنٹن اُمیدوار ہوں گی۔

ان دونوں کی باقاعدہ نامزدگی کا اعلان رواں ماہ کے آخر میں ہو گا۔

ایف بی آئی کے ڈائریکٹر نے کہا تھا کہ ہیلری کلنٹن نے خفیہ معلومات کے معاملے میں لاپرواہی کا مظاہرہ کیا تھا لیکن ادارہ ان کے خلاف مقدمہ چلانے کی سفارش نہیں کرے گا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک کا نظام ہیلری کلنٹن کو تحفظ دے رہا ہے اور انھوں نے ’پورے ملک کو خطرے‘ میں ڈالا ہے اور’ (ای میلز) ہیک ہو سکتی تھیں۔‘

انھوں نے کہا کہ ’اُن کی فیصلہ کرنے کی صلاحیت بہت خراب ہے۔‘ اور ’وہ ایک بہت گندی صدر ہوں گی۔‘

ڈونلڈ ٹرمپ کے علاوہ دوسری رپبلکن نے بھی ایف بی آئی کے فیصلے پر تنقید کی ہے۔

دوسری جانب امریکی صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ مسٹر کلنٹن سب سے زیادہ صدارت کے عہدے کی اہل ہیں۔

مسز کلنٹن کی مہم کے ترجمان نے ایف بی آئی کے فیصلے کا دفاع کیا ہے اور کہا ہے کہ ذاتی ای میل ایڈریس کا استعمال ’غلطی‘ تھا۔

اسی بارے میں