پوکے مون کی ویڈیو گیم کے خلاف سعودی فتویٰ

تصویر کے کاپی رائٹ .
Image caption فتوے میں کہا گیا ہے کہ پوکے مین جوئے سے کافی ملتا جلتا ہے

سعودی عرب کے مذہبی امور سے متعلق اعلٰی ادارے نے حال ہی میں متعارف کروائی جانے والی مقبول ویڈیو گیمز پوكے مون گو کے خلاف فتویٰ جاری کیا ہے۔

سعودی عرب خاصا قدامت پسند معاشرہ ہے اور ماضی میں بھی پوكے مون کے خلاف فتویٰ جاری کیا گیا تھا۔

اس ادارے نے 2001 میں جاری کیے گئے ایک فتوے کو ایک بار پھر نافذ کر دیا ہے۔

پوكے مون گو سرکاری طور پر سعودی عرب میں دستیاب نہیں ہے۔ تاہم بہت سے لوگ پراکسی سرور کا استعمال کرتے ہوئے یہ گیم ڈاؤن لوڈ کر کے کھیل رہے ہیں۔

Image caption اس ویڈیو گیم نے دنیا بھر میں دھوم مچا رکھی ہے

پوكے مون گو 1996 کے ننٹینڈو کھیل پر مبنی ہے اور اس نے دنیا بھر میں دھوم مچا رکھی ہے۔

اس کھیل میں کھلاڑی اصل دنیا میں جنات کارٹونوں کی تلاش کرتے ہیں۔

مذہبی علما کی کونسل کے سیکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ اس بارے میں بہت سے لوگوں کی جانب سوال پوچھنے پر پوكے مون کے خلاف 2001 میں دیے گئے فتوے کو پھر سے جاری کیا گیا ہے۔

اس فتوے میں کہا گیا ہے کہ پوكے مون جوئے سے کافی ملتا جلتا کھیل ہے جسے اسلام قبول نہیں کرتا۔

اسی بارے میں