’اوباما ممکنہ طور پر امریکی تاریخ کے بدترین صدر‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

امریکہ کے صدارتی انتخاب میں رپبلکن پارٹی کے امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے خود پر صدر اوباما کی تنقید کے بعد جوابی وار کرتے ہوئے ان کے دورِ اقتدار کو ’تباہ کن‘ قرار دیا ہے۔

صدر اوباما نے کہا تھا کہ ٹرمپ صدر بننے کے اہل نہیں ہیں۔

* ٹرمپ کو امریکی صدارتی انتخاب میں’دھاندلی‘ کا خدشہ

* ’ڈونلڈ ٹرمپ قربانی کا مطلب نہیں جانتے‘

*ٹرمپ کی حمایت نہ کرنے پر ٹیڈ کروز کی تضحیک

رپبلکن پارٹی کی جانب سے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک امریکی ٹیلیویژن کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ صدر اوباما ’کمزور اور غیرموثر رہے ہیں۔‘

انھوں نے صدر اوباما کے روس اور یوکرین کے درمیان بحران سے نمٹنے کے طریقۂ کار کا مذاق اڑایا۔

اس سے قبل اوباما نے کہا کہ ٹرمپ صدر بننے کے اہل نہیں ہیں اور سوال اٹھایا تھا کہ ان کی جماعت پھر بھی ان کی حمایت کیوں کر رہی ہے۔

براک اوباما نے کہا: ’ایک وقت آتا ہے کہ آپ کہتے ہیں بس بہت ہو گیا۔‘

منگل کو فرانس کے صدر فرانسوا اولاند بھی ڈونلڈ ٹرمپ پر تنقید کرنے والوں کی فہرست میں شامل ہو گئے۔ انھوں نے کہا کہ ٹرمپ کی وجہ سے لوگوں کو ’متلی‘ ہونے لگتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ’رپبلکن پارٹی کے امیدوار صدر کے عہدے کے لیے نا اہل ہیں اور وہ مسلسل یہ ثابت کر رہے ہیں‘

ایک سروے کے مطابق ٹرمپ کی حریف ہلیری کلنٹن نے اپنی سبقت بڑھا کر آٹھ پوائنٹ کر لی ہے۔ جمعے کو یہ سبقت چھ پوائنٹ تھی۔

فاکس نیوز سے بات کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ اوباما ’ممکنہ طور پر امریکی تاریخ کے بدترین صدر ہیں۔‘

انھوں نے کہا کہ ’میں خارجہ پالیسی کے بارے میں اوباما سے کہیں زیادہ جانتا ہوں۔‘

ٹرمپ نے کہا: ’یوکرین کو دیکھو۔ وہ یوکرین کے بارے میں بات کرتے ہیں اور یہ کہ وہ روس کے بارے میں کتنے سخت ہیں۔ اسی دوران روس نے کرائمیا پر قبضہ کر لیا۔‘

ادھر ٹرمپ پر اس بات پر تنقید کا سلسلہ جاری ہےکہ انھوں نے عراق میں مارے جانے والے ایک مسلمان امریکی فوجی کے والدین پر لفظی حملہ کیا تھا۔

اسی بارے میں