داعش کی معاونت، امریکی پولیس آفیسر پر فرد جرم عائد

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

امریکی وفاقی تحقیقاتی ایجنسی ایف بی آئی نے واشنگٹن ٹرنسپورٹ سسٹم کے لیے کام کرنے والے پولیس اہلکار پر اپنے آپ کو دولت اسلامیہ کہلانے والی شدت پسند تنظیم کی معاونت کرنے کا فرد جرم عائد کیا ہے۔

ایف بی آئی کے مطابق 36 سالہ پولیس آفیسر نکولس ینگ نے ایف بی آئی کے مخبری کو 250 ڈالر کا فون کریڈٹ بھیجا جو دولت اسلامیہ کے جنگجو میسیجنگ کے لیے استعمال کرتے ہیں۔

نکولس پہلے امریکی پولیس اہلکار ہیں جن کو دولت اسلامیہ کی معانوت کرنے پر گرفتار کیا گیا ہے۔

تاہم حکام کا کہنا ہے کہ واشنگٹن کی ٹرنسپورٹ سسٹم کو کسی قسم کا خطرہ نہیں ہے۔

ایف بی آئی کا کہنا ہے کہ نکولس کی تحقیقات سنہ 2010 سے کی جا رہی تھیں۔

ایف بی آئی کا کہنا ہے کہ نکولس 2011 میں لیبیا میں باغیوں کے ہمراہ صدر معمر قذافی کے خلاف لڑنے گئے تھے۔

حکام کا مزید کہنا ہے نکولس کے امین الخلیفی کے ساتھ روابط تھے۔ الخلیفی نے 2012 میں کیپیٹل ہل کی عمارت میں دھماکہ کرنے کے منصوبے کا اعتراف کیا تھا۔

نکولس واشنگٹن ٹرانسپورٹ سسٹم میں 2003 سے کام کر رہے تھے۔

اسی بارے میں