سوئٹزرلینڈ: ٹرین میں مسافروں پر چاقو سے حملہ

تصویر کے کاپی رائٹ Otto Didakt Wikimedia Commons
Image caption جائے حادثہ پر تین ریسکیو ہیلی کاپٹر موجود ہیں اور پولیس کا بڑا آپریشن جاری ہے

پولیس کے مطابق ایک شخص نے مشرقی سوئٹزرلینڈ میں موجود ریل گاڑی کے مسافروں پر چاقو کے وار کرنے کے بعد اس ٹرین میں آگ لگا دی جس کے نتیجے میں چھ افراد زخمی ہو گئے۔

٭ جرمنی میں کلہاڑی اور چاقو سے حملہ

٭جاپان چاقو کے حملے میں 19 ہلاک

اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ سوئٹزرلینڈ کے شہر سینٹ گیلن کینٹن کے علاقے سالیز میں پیش آیا جبکہ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

مشتبہ حملہ آور کی عمر 27 برس بتائی گئی ہے اور انھیں بھی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

حملہ آور نے لوگوں پر چاقو سے وار کرنے سے قبل آتش گیر مایا کے ذریعے آگ لگائی۔ حملے کی وجہ ابھی معلوم نہیں ہوسکی ہے۔

جائے حادثہ پر تین ریسکیو ہیلی کاپٹر موجود ہیں اور پولیس کا بڑا آپریشن جاری ہے۔

گرینج کے مقامی وقت کے مطابق یہ واقعہ دوپہر ساڑھے 12 بجے اس وقت پیش آیا جب گاڑی سالیز سٹیشن کے قریب پہنچی۔ یہ سٹیشن پچز اور سینوالڈ کے دیہات کے درمیان واقع ہے۔

جس وقت سے حملہ ہوا اس وقت ریل گاڑی میں درجنوں مسافر موجود تھے۔

زخمیوں میں ایک بچے کے علاوہ ایک لڑکی، لڑکا جن کی عمریں 17 برس بتائی گئی ہیں، 34 اور 43 سال کی دو خواتین اور ایک 50 سالہ شخض شامل ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ ان چھ زخمیوں میں سے چند کی حالت تشویشناک ہے۔

خیال رہے کہ اس قسم کے حملوں سے خبردار رہنے کے لیے یورپی ریاستوں میں پہلے ہی الرٹ جاری کیا جا چکا ہے جس کی وجہ حالیہ عرصے میں کسی اکیلے مسلح شخص کی جانب سے کیے جانے والے متعدد حملے ہیں۔

گذشتہ ماہ ایک افغان پناہ گزین نے جنوبی جرمنی میں ہتھوڑے کے وار کر کے چار افراد کو زخمی کیا تھا۔

نام نہاد شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے بعد میں ایک ویڈیو کے ذریعے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی۔ حملہ آور نے فرار ہونے کی کوشش کی تھی جس پر پولیس نے اسے گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔

اسی بارے میں