فرانس میں یہودی شخص پر چاقو سے حملہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سٹرازبرگ میں یہودیوں کی ایک بڑی تعداد رہتی ہے

فرانس کے شہر سٹریسبرگ میں ایک یہودی شخص کو چاقو سے وار کر کے زخمی کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حملہ آور کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ وہ حملے کے وقت اللہ اکبر کے نعرے لگا رہا تھا۔

پولیس کے مطابق یہودی شخص نے روایتی یہودی لباس پہنا ہوا تھا اور اب ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

مقامی پولیس نے بی بی سی کو بتایا کہ اس حملے کا تعلق شدت پسندی سے نہیں۔ اے ایف پی نیوز ایجنسی سے بات کرتے ہوئے پولیس نے مزید کہا کہ حملہ آور ماضی میں دماغی بیماریوں کا شکار رہا ہے۔

فرانسیسی ڈیجیٹل ٹی وی سے تعلق رکھنے والے صحافی الیگزینڈر گونزیلیس نے بتایا کہ اس حملے میں اب تک کسی قسم کا یہود دشمنی کا عنصر سامنے نہیں آیا۔

یاد رہے کہ سٹرازبرگ میں یہودیوں کی ایک بڑی تعداد رہتی ہے۔

فرانس میں یہہودیوں کو حالیہ کچھ برسوں میں اسلامی شدت پسندوں کی طرف سے نشانہ بنایا گیا ہے۔

گذشتہ سال جنوری میں پیرس میں ایک مقامی کوشر سپر مارکیٹ پر حملہ کیا گیا جبکہ جنوبی شہر تولوس میں ایک یہودی سکول کو مارچ 2012 میں نشانہ بنایا گیا تھا۔

اسی بارے میں