ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے انچارج مستعفی

Image caption پال مینافورٹ رواں برس مارچ میں ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم سے وابستہ ہوئے تھے

رپبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے انچارج پال مینافورٹ اپنے عہدے سے مستعفیٰ ہو گئے ہیں۔

صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے مینافورٹ کے استعفے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا: ’آج صبح پال مینافورٹ نے استعفے کی پیشکش کی اور میں نے اسے منظور کر لیا۔‘

ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ وہ مینافورٹ کے کام کی بہت قدر کرتے ہیں اور ان کی انتخابی مہم جس مقام پر ہے وہاں پہنچنے میں مینافورٹ کی کاوشوں کا بہت عمل دخل ہے۔

مینافورٹ کو دو ماہ پہلے ہی ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے انچارج کوری لیوانڈاؤسکی کو ان کے عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد مقرر کیا گیا تھا۔

ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ پال مینافورٹ کےمستعفیٰ ہونے کی وجوہات کیا ہیں۔ البتہ حالیہ ایام میں نیویارک ٹائمز میں ایسی خبریں چھپی تھیں جن کے مطابق وہ یوکرین کے روس نواز صدر وکٹر یانکوچ کے مشیر کے طور پر کام کرتے رہے ہیں۔

یوکرین کی حکومت نے حالیہ دنوں میں کچھ ایسے کھاتوں کی نشاندہی کی تھی جس کے مطابق مینافورٹ کو ایک کروڑ 20 لاکھ پاؤنڈ کی ادائیگیاں کی گئی تھیں۔

مینافورٹ کسی غیرقانونی کام میں ملوث ہونے کی پر زور تردید کرتے ہیں۔ وہ اس سے پہلے جارج ڈبلیو بش اور باب ڈول کے بھی مشیر رہ چکے ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم میں دو ماہ کے عرصے میں تیسری مرتبہ تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ انھوں نے دو ہفتے قبل مہم کے چیف ایگزیکٹیو افسر اور نئے مینیجر کا تقرر کیا تھا۔

صدارتی امیدوار بننے کے بعد ڈونلڈ کے متعدد متضاد بیانات کے بعد رپبلکن پارٹی کے کئی اعلیٰ عہدیداروں نے ڈونلڈ ٹرمپ سے کہا ہے کہ وہ اپنے جارحانہ اور متنازع بیانات پر قابو پائیں جن کی وجہ سے ان کی مقبولیت میں مسلسل کمی ہو رہی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی مہم میں تبدیلی کے مطالبوں کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’لوگ کہتے ہیں تم بدل جاؤ گے، تم بدلو گے۔ میں بدلنا نہیں چاہتا۔ میرا مطلب ہے آپ کو ویسا ہونا چاہیے جیسے آپ ہیں۔ اگر آپ بدل جاتے ہیں تو لوگوں کے ساتھ بددیانتی کرتے ہیں۔‘

اسی بارے میں