دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے لاعلم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption چین میں صرف دو فیصد خواتین ٹیمپون یعنی روئی کے پھاہے کا استعمال کرتی ہیں

1۔ نیورو سائنسدانوں نے تخلیقی صلاحیت کو جانچنے کے لیے معروف موسیقار سٹنگ کے دماغ کو سکین کیا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (نیو یارک میگزن)

2۔ لمبے قد کے افراد زیادہ تر کنزرویٹو کو ووٹ دے سکتے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (ڈیلی میل)

3۔ زیادہ تر کتے کھانے کی تعریف کرنا پسند کرتے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (سائنس)

4۔ ایک گھر کے لیے واحد روزی روٹی کمانے والا ہونا مردوں کی صحت کے لیے خراب ہے جبکہ خواتین کے لیے اچھا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دی گارڈیئن)

5۔ چین میں صرف دو فیصد خواتین ٹیمپون یا روئی کے پھاہے کا استعمال کرتی ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں
تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سائنسدانوں نے تخلیقی صلاحیت کی جانچ کے لیے موسیقار سٹنگ کے دماغ کی سکیننگ کی ہے

6۔ پیشہ ور گولف کھلاڑی کے کولھے کی ایک ہڈی کے انڈے کی شکل کا ہونے کا زیادہ امکان ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

7۔ وائرس صبح کے وقت زیادہ خطرناک ہوتے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

8۔ جنوبی چین کے نیننگ شہر میں لوگ چوہوں سے حفاظت کے لیے اپنی کار کے ساتھ سکرٹ لگا دیتے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

9۔ ٹائپ ٹو ذیابیطس کی سطح کو کم کرنے کے لیے سائکلنگ کے مقابلے میں گرم پانی سے غسل زیادہ مفید ہو سکتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دی ٹیلیگراف)

10۔ میلان کی 1270 پیزا کی دکانوں میں نصف سے زیادہ غیر اطالوی چلاتے ہیں جن میں سے دو تہائی مصری ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دی ٹائمز)

اسی بارے میں