سعودی عرب:’مسجد پر حملے کی کوشش، حملہ آور ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سعودی عرب میں حالیہ کچھ عرصے میں شدت پسندی کے واقعات میں اضافہ دیکھا گیا ہے

سعودی عرب میں اطلاعات کے مطابق شیعہ آبادی کی اکثریت پر مشتمل مشرقی علاقے قطیف میں سکیورٹی فورسز نے ایک مسجد پر حملے کو ناکام بنا دیا ہے۔

سعودی عرب کے ٹی وی عرب نیوز کے مطابق قطیف کے ایک گاؤں امہ الحمام میں سکیورٹی فورسز کی فائرنگ میں ایک مشتبہ حملہ آور مارا گیا۔

سکائی نیوز عربیہ نے سکیورٹی فورسز کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایک حملہ آور کی ہلاکت کے علاوہ ایک کو زندہ گرفتار کیا گیا ہے۔

عرب نیوز نے بتایا ہے کہ مارے جانے والے حملہ آور نے بارود سے بھری جیکٹ پہن رکھی تھی۔

بعض غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق گرفتار اور ہلاک ہونے والے مشتبہ حملہ آور کا تعلق سعودی عرب سے نہیں تھا تاہم ان اطلاعات کی تصدیق نہیں ہو سکی۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں گذشتہ کچھ عرصے سے شدت پسندی کے واقعات میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

پانچ جولائی کو سعودی عرب کے تین شہروں میں خودکش حملے کیے گئے تھے۔ سب سے پہلا جدہ میں امریکی قونصلیٹ کے باہر، دوسرا شیعہ اکثریتی علاقے قطیف اور تیسرا مدینہ میں مسجد نبوی کے قریب ہوا تھا۔

قطیف میں اس سے پہلے بھی شدت پسندی کے واقعات میں شیعہ آبادی کو نشانہ بنایا جا چکا ہے۔

اسی بارے میں