برما میں زلزلے سے درجنوں خانقاہوں کو نقصان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption برما میں محکمہ آثار قدیمہ کے ترجمان نے بتایا کہ بگان میں کم از کم 66 سٹوپوں کو نقصان پہنچا ہے

برما کے واسطی شہر بگان میں 6.8 شدت کے زلزلے سے قدیم شہر بگان میں واقع خانقاہوں کو نقصان پہنچا ہے جبکہ کم از کم ایک شخص کی ہلاکت کی اطلاعات ہیں۔

امریکی ارضیاتی مرکز کے مطابق زلزلے کا مرکز چوؤک سے 25 کلومیٹر مغرب میں 84 کلومیٹر گہرائی میں تھا۔

زلزلے کے جھٹکے تھائی لینڈ، بنگلہ دیش اور انڈیا میں بھی محسوس کیے گئے اور بہت سے لوگ خوف سے گھروں سے باہر آگئے۔

برما میں محکمہ آثار قدیمہ کے ترجمان نے بی بی سی کو بتایا کہ بگان میں کم از کم 66 سٹوپوں کو نقصان پہنچا ہے۔

پکوکو شہر میں ایک عمارت گرنے سے ایک 22 سالہ شخص ہلاک ہوگیا ہے۔

سوشل میڈیا پر جاری ہونے والی ویڈیوز میں بگان میں زلزلے سے سٹوپوں کی چھتریوں گرتے ہوئے اور گرد و غبار کے بادل اٹھتے دیکھا جا سکتا ہے۔

خیال رہے کہ بگان ایک معروف سیاحتی مقام ہے اور یہاں ہزاروں کی تعداد بدھ مت کے یادگاریں ہیں۔

بعض اطلاعات کے مطابق دارالحکومت نیپیداو میں پارلیمانی عمارت کو بھی زلزلے سے نقصان پہنچا ہے۔

برما کے سب سے بڑے شہر ینگون کے ساتھ ساتھ تھائی لینڈ کے دارالحکومت بینکاک اور انڈین شہر کولکتہ بھی بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے جہاں عارضی طور پر ریلوے سروس معطل کر دی گئی۔

بنگلہ دیشی دارالحکومت ڈھاکہ میں مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق کم از کم 20 افراد کے زخمی ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں