ڈیوڈ کیمرون کا برطانوی پارلیمان چھوڑنے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption ابتدا میں ان کا کہنا تھا کہ وہ آئندہ انتخابات تک ایم پی کی حیثیت سے اپنی دمہ داریاں ادا کرتے رہیں گے

سابق برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے برطانوی پارلیمان میں کنزرویٹو پارٹی کی نشست چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

٭ ’تیسری بار وزیراعظم نہیں بنوں گا‘

٭ کیمرون مستعفی، ٹریزامے نئی وزیراعظم

آکسفورڈ شائر کے علاقے ویٹنی میں ان کی نشست خالی ہونے کے بعد اب ضمنی انتخابات متوقع ہیں۔

خیال رہے کہ ڈیوڈ کیمرون نے رواں برس جون میں اس وقت وزارتِ عظمیٰ سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا تھا جب برطانوی عوام نے ایک ریفرینڈم میں یورپی یونین سے نکل جانے کا فیصلہ کیا تھا۔

ابتدا میں ان کا کہنا تھا کہ وہ آئندہ انتخابات تک ایم پی کی حیثیت سے اپنی دمہ داریاں ادا کرتے رہیں گے۔

ڈیوڈ کیمرون سنہ 2001 سے اس نشست سے نمائندگی کر رہے ہیں۔ سنہ 2005 میں انھوں نے کنزرویٹو پارٹی میں شمولیت اختیار کی اور سنہ 2010 سے 2016 تک وہ اسی نشست پر کامیابی حاصل کرنے کے بعد ملک کے وزیراعظم کی حیثیت سے خدمات سرانجام دیتے رہے۔

اسی بارے میں